سبق نمبر ٢٢: ہر وہ چیز : فھم عربی کورس: سماء ،کعبہ ،عورت ،حدیقہ ،عرض ،فاحشہ ،تہلکہ ،قارعہ ،موبق ،صرح ،صعید ،دابۃ ،غیب ،سحت ،حصب اور شجر ان الفاظ کے متعلق ایک مفید قاعدہ :



سبق نمبر ٢٢:
ہر وہ چیز :
فھم عربی کورس:
سماء ،کعبہ ،عورت ،حدیقہ ،عرض ،فاحشہ ،تہلکہ ،قارعہ ،موبق ،صرح ،صعید ،دابۃ ،غیب ،سحت ،حصب اور شجر ان الفاظ کے متعلق ایک مفید قاعدہ :
مگر یاد رہے ،یہ دیگر معنی میں بھی استعمال ہوتے ہیں ۔

سمائ:۔۔۔۔۔۔
کلُّ ما عَلاک فأظلَّک فہو سماء
ہر وہ چیز جو تمہارے اوپر ہو کر سایہ کرے وہ سماء ہے ۔

کعبۃ:
کل بِناء َ مُرَبَّع فہوَ کَعْبَۃ
ہر مربع عمارت کو کعبہ کہتے ہیں ۔

عورت :
کلُّ ما یُسْتحیا من کَشْفِہِ منْ أعضاء ِ الإِنسانِ فہوَ عَوْرۃ.
انسانی اعضاء میں سے ہر وہ چیز جس کو ظاہر کرنے سے حیاء کی جاتی ہے ،وہ عورت ہے ۔

حدیقۃ:
کلُّ بُسْتانٍ علیہ حائطٌ فہو حَدیقۃ والجمع حَدَائق
ہر وہ باغ جس کے گرد دیوار ہو وہ حدیقہ ہے ،اس کی جمع حدائق ہے ۔

عرض:
کلُّ شیء ٍ منْ مَتَاعِ الدُّنْیا فہو عَرَض
متاع دنیا میں سے ہر چیز عرض ہے ۔

فاحشہ:
کلُّ أمْرٍ لا یکون مُوَافِقاً للحقِّ فہو فاحِشۃ
ہر وہ امرجو حق کے موافق نہ ہو ،وہ فاحشہ ہے ۔

تَہْلُکۃ:
کلُّ شیء ٍ تَصیرُ عاقِبتُہُ إلی الہلاکِ فہو تَہْلُکۃ
ہر وہ چیز جسکی عاقبت ہلاکت ہو ،وہ تہلکہ ہے ۔

قارِعَۃ:
کلُّ نازِلۃٍ شَدیدۃٍ بالإِنسانِ فہی قارِعَۃ
ہر وہ سخت مصیبت جو انسان پر آئے وہ قارعہ ہے ۔

مَوْبِق:
کلُّ حاجِزِ بَینَ الشَیْئینِ فَہو مَوْبِق
ہر وہ چیز جو دو چیزوں کے درمیان حاجز ہو ،موبق ہے ۔

َ صَرْحٌ:
کلُّ بِنَاء ٍ عال فہوَ صَرْحٌ
ہر بلند عمارت صرح ہے۔

صعید :
کلُّ أرض مُسْتَوِیَۃٍ فہی صَعید
ہر ارض مستویہ صعید ہے ۔

دابۃ :
کلُ شیء ٍ دَبّ علی وَجْہِ الأرْضِ فہو دَابَّۃٌ
ہر وہ چیز جو زمین پر رینگتی ،ہاتھوں یا پاؤں کے بل چلتی ہے وہ دابہ ہے ۔

غیب:
کلُّ ما غَابَ عن العُیونِ وکانَ مُحصَّلا فی القُلوبِ فہو غَیْب
ہر وہ چیز جوآنکھوں سے غائب ہو،اور محصّل فی القلوب ہو،غیب ہے ۔

َ سُحْت:
کلُّ حرام قَبیحِ الذِّکرِ یلزَمُ منہ الْعارُِ فہوَ سُحْت
ہر حرام قبیح الذکر جس سے عار لازم آئے وہ سحت ہے ۔

حَصَب:
کلُّ ما ہَیَجتَ بہِ النارَ إذا أوقَدْتَہا فہو حَصَب
ہر وہ چیز جس سے آپ آگ جلاتے وقت آگ کو بھڑکاتے ہیں وہ حصب ہے ۔

شَجَر:
کلُّ ما کانَ علی ساقٍ من نَباتِ الأرْضِ فہو شَجَرٌ
ہر وہ نبات ارض جو تنے پر ہو شجر ہے ۔

(فقہ اللغۃ و سر العربیۃ ،ابو منصور الثعالبی ،ملخصا)

نوٹ :
قرآن و حدیث میں کسی لفظ کی وضاحت وہی کی جائے گی ،جومعتبر تفاسیر و شروح حدیث میں ائمہ ثقات سے منقول ہے۔

طالب دعا :
احسان اللہ کیانی
١٦۔جولائی ۔٢٠١٧