سرسید بطور مذہبی رہنما:

سرسید بطور مذہبی رہنما:
سرسید نے اپنی کتب و رسائل میں مذہبی موضوعات پر بہت کچھ لکھا ہے۔یوں تو سرسید وہابی تحریک سے بھی خاصے متاثر تھے
لیکن
ملکہ وکٹوریہ کےزمانے میں آپ نے انگلستان کے جدید افکار اور خیالات کو مکمل طور پر قبول کر لیا تھا ،خصوصا آپ عقل اور نیچر (فطرت ) کے نظریے سے بہت متاثر تھے ،اس لیے آپ کو "نیچری "بھی کہا جاتا ہے.
آخری عمر میں آپ کے خیالات بالکل ہی سلف کےعقائد سے مختلف ہو چکے تھے ،اسی لیے اس وقت کے علماء نے آپ سے شدید اختلاف کیا ۔