تازہ ترین
کام جاری ہے...
Monday, July 31, 2017

ہیرے تراش ۔۔ ۔۔۔۔تحریر: محمد اسمٰعیل

July 31, 2017

ہیرے تراش          ۔۔ ۔۔۔۔تحریر: محمد اسمٰعیل بدایونی
عالم بنائیے ۔۔۔  جلی حروف سے لکھا ہوا عنوان پڑھا تو  دل بہت خوش ہوا ۔
لیکن نہاں خانہ دل  میں آواز آئی کیا تو اپنے بیٹے کو عالم بنائے گا ؟
نہیں :میں نے صاف گوئی  سے کہا ۔
وہ کیوں ؟
یا ر!وزگار کہاں سے کمائےگا؟
امامت ،خطابت اور وہ بھی مسجد کمیٹیوں سے ڈر ڈر کر ۔۔۔۔کہیں مزدور سے  بھی کم اجرت پر مدرس ہو جائے گا۔
اب وہ لوگ جو  درسِ نظامی کا پروگرام مرتب کرتے ہیں  ذرا سوچیں !
کیا محض آپ کے بڑے بڑے بینر  آپ کو آپ کے مشن میں کامیاب کر پائیں گے ؟
کیا لوگ جوق در جوق درسِ نظامی میں داخلہ لینے کے خواہش مند ہوں گے ؟
نہیں نا !
تو بھائی آپ ہر سال شوال میں یہ  بے مقصد پریکٹس کرتے ہی کیوں ہیں ؟
آپ کہیں گے ثواب تو مل جائے گا ۔
ثواب بڑا سستا ہے ۔۔۔۔۔بھائی!آپ چاہتے کیا ہیں ’’ ثواب اور مشن کی تکمیل‘‘
یقیناً آپ کا جواب ہو گا دونوں
تو میرے دوست!  آپ نے باغبان کو دیکھا ہو گا  وہ پودوں کی حفاظت کرتا ہے   ۔۔۔۔۔جو خود کار  گھاس پھونس پودے کے ارد گرد اگ آتی ہے اس کو کاٹتا ہے ۔۔۔۔اس کی نشوونما کا خیال رکھتا ہے ۔۔۔۔
اگر باغبان  باغ کا خیال نہ رکھے تو یاد رکھیے گا  درخت کبھی بھی ثمر نہیں لاتا ۔۔۔۔۔پودے سوکھ سوکھ کر ختم ہو جاتے ہیں ۔۔۔۔۔
ہم لاتعداد علماء پیدا کررہے ہیں ہر سال وہ معاشرے میں کہاں گم ہو جاتے ہیں؟؟؟؟؟؟؟؟؟
سوچیے گا ضرور !!!!!
آپ بھی ان مدارس کے باغبان ہیں ان مدارس میں ایسے علماء پیدا کیجیے جو معاشی طور پر خود کفیل ہو سکیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور یہ بہت مشکل کام نہیں ہے ۔
ایک مشورہ مثال کے طور پر وہ تما م مدارس جو  شام میں درسِ نظامی کرارہے ہیں اگر وہ  شام میں ایک کلاس کامرس کے سبجیکٹ کی بھی شامل کر لیں تو بی کام اور آئی کام کے طلبہ کے لیے یہ بہت اچھا رہے گا ۔
جو جامعات بڑی ہیں وہ   اپنے ادارے میں ایسے ڈیپارٹمنٹ بنائیں جہاں وہ عصری تعلیم بھی ساتھ ساتھ دیں ۔۔۔۔۔۔
اس سے کم ازکم مادیت کے بخار میں کچھ کمی ضرور واقع ہو گی اور معاشرے میں ایسے پروفیشنل لوگ آنا شروع ہو جائیں گے جن میں خوفِ خدا  ضرور ہو گا ۔۔۔۔۔
آئیے اپنے ادارے سے فعال لو گ  پیدا کیجیے ۔۔۔۔۔اپنے اداروں کو مضبوط کیجیے ۔۔۔۔۔اپنے مدارس  کو  عصرِ حاضر سے ہم آہنگ کیجیے۔۔۔۔۔اپنے اساتذہ کو  مختلف پروفیشنل کورسز کروائیے ۔کچھ فکری ںشستوں کا اہتمام کیجیے جیسے۔ تقابل ادیان ،فکر مغرب کا مطالعہ ، اسلام اور  استشراق و الحاد  ،عالمی معاشی ادارے کس طرح کام کرتے ہیں ،وغیرہ وغیرہ
پھر آپ دیکھیں  گےآپ کے پاس ہیروں کی کمی نہیں بس تراشنے والا ہو نا چاہیے

https://www.facebook.com/IslamicResearchSociety/ )
ڈاکٹر محمد اسمٰعیل بدایونی کی تحریر کردہ کتب ،مکتبہ انوارا لقرآن ، مصلح الدین گارڈن  ،03132001740 مکتبہ برکات المدینہ بہادرآباد اور مکتبۃ الغنی پبلشرز نزد فیضان مدینہ پرانی سبزی منڈی سے حاصل کریں ۔03152717547

0 تبصرے:

Post a Comment

کمنٹ کا شکریہ ۔۔۔آپ کا تبصرہ جلد ایڈمن کی طرف سے ظاہر کر دیا جائے گا

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں