غیرت کے نام پر قتل

میں نے فون اٹھایا  اور سول سوسائٹی پاکستان کے دفتر کال ملائی۔ دوسری جانب فرزانہ باری لائن پر تھی، بولی کیا کام ہے آپ کو ؟ میں نے کہا  لاہور میں غیرت کے نام پر قتل ہو گیاہے۔اس نے فون پر ہی چیخنا شروع کر دیا ’جبران ناصر کو بلاوْ، موم بتیاں اور بینر اکٹھے کرو، تمام زنگ آلود آنٹیوں، ٹھرکی بڈھوں اور لختئی لونڈوں کو بتاوْ کہ کل ملک گیر دھرنے اور احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں گے‘ میں آہستہ سے بولا ’آنٹی قاتل عیسائی ہے‘
دوسری طرف تھوڑی دیر خاموشی رہی  پھر آواز آئی
’ سارے پروگرام کینسل کر دو، قصور لڑکی کا لگتا ہے‘

http://nation.com.pk/national/01-Jul-2017/man-kills-sister-for-honour-in-lahore