شریعت اسلامیہ میں نماز کی اہمیت:

شریعت اسلامیہ میں نماز کی اہمیت:
ہر مکلّف یعنی عاقِل بالغ پر نما ز فرض عین ہے اس کی فرضیت کا منکر کافر ہے۔
اور جو قصداً چھوڑ ے
اگرچہ ایک ہی وقت کی وہ فاسِق ہے
اور جو نماز نہ پڑھتا ہو،تو اسے قید کیا جائے یہاں تک کہ توبہ کرے اور نماز پڑھنے لگے
بلکہ
ائمۂ ثلٰثہ مالک و شافعی و احمد رضی اللہ تعالیٰ عنہم کے نزدیک سلطانِ اسلام کو اس کے قتل کا حکم ہے۔
(درمختار )

بچّہ کی جب سات برس کی عمر ہو، تو اسے نماز پڑھنا سکھایا جائے
اور جب دس برس کا ہو جائے
تو مار کر پڑھوانا چاہیے۔
(ابو داود و ترمذی)

از
#احسان_اللہ کیانی