تازہ ترین
کام جاری ہے...
Saturday, June 17, 2017

مریض کی عیادت کے متعلق احکام:

June 17, 2017

مریض کی عیادت کے متعلق احکام:
مریض کی عیادت کرناسنت ہے
اگر معلوم ہے کہ عیادت کوجائے گا ،تو اس بیمار پر گراں گزرے گا، ایسی حالت میں عیادت نہ کرے۔
عیادت کو جائے اور مرض کی سختی دیکھے ،تو مریض کے سامنے یہ ظاہر نہ کرے کہ تمھاری حالت خراب ہے
اور
نہ سر اپنا ہلائے، جس سے حالت کا خراب ہونا سمجھا جاتا ہے
اس کے سامنے ایسی باتیں کرنی چاہیے ،جو اس کے دل کو اچھی معلوم ہوں
اس کی مزاج پرسی کرے ،اس کے سر پر ہاتھ نہ رکھے مگر جبکہ وہ خود اس کی خواہش کرے۔
فاسق کی عیادت بھی جائز ہے
کیونکہ
عیادت حقوق اسلام سے ہے
اور فاسق بھی مسلم ہے۔

یہودی یا نصرانی اگر ذمی ہو تو اس کی عیادت بھی جائز ہے۔
(درمختار، ردالمحتار)
مجوسی کی عیادت کو جائے یا نہ جائے، اس میں علما کو اختلاف ہے یعنی جبکہ یہ ذمی ہو۔
(عنایہ)

ہندو مجوس کے حکم میں ہیں
ان کے احکام وہی ہیں جو مجوسیوں کے ہیں

طالب دعا:
احسان اللہ کیانی
18 جون 2017

0 تبصرے:

Post a Comment

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


Translate in your Language

LinkWithin

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں