تازہ ترین
کام جاری ہے...
Saturday, June 17, 2017

جانوروں سے کام لینا:

June 17, 2017

جانوروں سے کام لینا:
جانور سے کام لینے میں یہ لحاظ ضروری ہے کہ اس کی طاقت سے زیادہ کام نہ لیا جائے۔
اتنا نہ لیا جائے کہ وہ مصیبت میں پڑجائے
جتنا بوجھ اٹھا سکتا ہے اتنا ہی اس پر لاداجائے
یا
جتنی دور جاسکے، وہیں تک لے جایا جائے
یا
جتنی دیر تک کام کرنے کا متحمل ہوسکے، اتنا ہی لیا جائے۔ بعض یکہ تانگہ والے اتنی زیادہ سواریاں بٹھالیتے ہیں کہ گھوڑا مصیبت میں پڑ جاتا ہے
یہ ناجائز ہے
اور یہ بھی ضروری ہے کہ بلاوجہ جانور کو نہ مارے
اور
سر یا چہرہ پر کسی حالت میں ہر گز نہ مارے کہ یہ بالا جماع ناجائز ہے۔
جانور پر ظلم کرنا ذمی کافر پر ظلم کرنے سے زیادہ برا ہے اور
ذمی پر ظلم کرنا مسلم پر ظلم کرنے سے بھی برا
کیونکہ
جانور کا کوئی معین و مددگار ﷲ کے سوا نہیں، تو اس غریب کو اس ظلم سے کون بچائے گا۔
(درمختار، ردالمحتار)

0 تبصرے:

Post a Comment

اس کے متعلق آپکی کیا رائے ہے ۔۔؟؟
کمنٹ بوکس میں لکھ دیں ،تاکہ دیگر لوگ بھی اسے پڑھ سکیں

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں