سو سال بعد تجدید اور مجدد:

سو سال بعد تجدید:
حدیث شریف میں ہے:
"إِنَّ اللَّهَ يَبْعَثُ لِهَذِهِ الْأُمَّةِ عَلَى رَأْسِ كُلِّ مِائَةِ سَنَةٍ مَنْ يُجَدِّدُ لَهَا دِينَهَا"
اللہ اس امت کے لیے ہر صدی کی ابتداء یا انتھاء میں ایسے شخص کو مبعوث فرمائے گا ،جو اس کی رضا کے لیے اس کے دین کی تجدید کرے گا ۔
(سنن ابوداؤد)

توجہ طلب:
اس حدیث سے معلوم ہوا،سو سال میں لوگوں کی سوچیں تبدیل ہوچکی ہوتی ہیں.

طالب دعا:
#احسان_اللہ کیانی