فرض کی پہلی دو رکعتوں کی قرات کے متعلق سوال

ایک صاحب نے کمنٹ میں ایک سوال پوچھا تھا،اسکا جواب پیش خدمت ہے.

Salam.
Molana sahib farzon ki akhri 2 rakat  mn agr hamesha surah mila dn ya bhool kr 1 rakat mn mila di dosri mn nhi to koi harj he.

وعلیکم السلام
مختصر القدوری میں ہے
"والقراءة في الفرض واجبة في الركعتين الأوليين وهو مخير في الأخريين إن شاء قرأ وإن شاء سبح وإن شاء سكت
والقراءة واجبة في جميع ركعات النفل"

فرض کی پہلی دو رکعتوں میں قرات واجب ہے،
آخری دو میں اسے اختیار ہے،
چاہے قرات کرے ،چاہے سبحان اللہ کھ لے،چاہے خاموش رہے.
جبکہ (سنت ،وتر اور) نوافل کی ہر رکعت میں قرات ضروری ہے