تازہ ترین
کام جاری ہے...
Saturday, June 3, 2017

علم، تعلیم اور علماء کے متعلق چند احادیث

June 03, 2017

علم، تعلیم اور علماء کے متعلق چند احادیث:
سب سے زیادہ حسر ت قیامت کے دن اس کو ہوگی جسے دنیا میں طلبِ علم کا موقع ملا، مگر اس نےطلب نہیں کی
اور
اس شخص کو ہوگی جس نے علم حاصل کیا اور اس سے سن کر دوسروں نے نفع اٹھایا خود اس نے نفع نہیں اٹھایا
(ابن عساکر)

جس کو موت آگئی اور وہ علم کو اس لیے طلب کررہا تھا کہ اسلام کا احیا کرے، اس کے اور انبیا کے درمیان جنت میں ایک درجہ کا فرق ہوگا
(سنن دارمی)

اچھا شخص وہ عالمِ دین ہے کہ اگر اس کی طرف احتیاج لائی جائے تو نفع پہنچاتا ہے اور اس سے بے پروائی کی جائے تو وہ اپنے کو بے پروا رکھتا ہے
(رزین)

علم کی آفت نسیان ہے اور نااہل سے علم کی بات کہنا علم کو ضائع کرنا ہے
(سنن دارمی)

جس کو کوئی بات معلوم ہے وہ کہے اور نہ معلوم ہو تو یہ کہدے کہ اﷲاعلم
(بخاری)

جس نے علم کو اس لیے طلب کیا کہ علما سے مقابلہ کریگا
یا
جاہلوں سے جھگڑا کریگا
یا
اس لیے کہ لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کریگا، اﷲ تعالیٰ اسے جہنم میں داخل کردے گا
(ترمذی،ابن ماجہ)

جو علم اﷲ تعالیٰ کی رضا حاصل کرنے کے لیے ہے (یعنی علم دین)اس کو جو شخص اس لیے حاصل کرے کہ متاعِ دنیا مل جائے، اس کو قیامت کے دن جنت کی خوشبو نہیں ملے گی.
(مسند احمد،سنن ابوداؤد)

جس کو بغیر علم فتویٰ دیا گیا تو اس کا گناہ اس فتویٰ دینے والے پر ہے
(سنن ابوداؤد)

جب عالم باقی نہ رہیں گے جاہلوں کو لوگ سردار بنالیں گے، وہ بغیر علم فتویٰ دیں گے، خود بھی گمراہ ہوں گے اور دوسروں کو بھی گمراہ کریں گے.
(بخاری)

بدتر سے بدتر برے علما ہیں اور بہتر سے بہتر اچھے علما ہیں.
(دارمی)

جس نے علم طلب کیا اور حاصل کرلیا اس کے لیے دو چند اجر ہے اور حاصل نہ ہوا تو ایک اجر
(سنن دارمی)

علم تین ہیں، آیت محکمہ یا سنت قائمہ یا فریضہ عادلہ اور ان کے سوا جو کچھ ہے، وہ زائد ہے
(ابن ماجہ)

جس شخص کے ساتھ اﷲ تعالیٰ بھلائی کا ارادہ کرتا ہے، اس کو دین کافقیہ بناتا ہے.
(بخاری)

انسان جب مرجاتا ہے اس کا عمل منقطع ہوجاتا ہے ،مگر تین چیزیں (کہ مرنے کے بعد بھی یہ عمل ختم نہیں ہوتے، اس کے نامہ اعمال میں لکھے جاتے ہیں)
ان میں سے ایک وہ علم ھے جس سے نفع حاصل کیا جائے.
(مسلم)

جو شخص کسی راستہ پر علم کی طلب میں چلے، اﷲ تعالیٰ اس کے لیے جنت کا راستہ آسان کردے گا.
(مسلم)

ایک فقیہ ہزار عابد سے زیادہ شیطان پر سخت ہے.
(ترمذی)

جو شخص طلب علم کے لیے گھر سے نکلا تو جب تک واپس نہ ہو، ﷲ کی راہ میں ہے.
(ترمذی،دارمی)

ایک گھڑی رات میں پڑھنا پڑھانا، ساری رات عبادت سے افضل ہے
(سنن دارمی)

جس نے میری امت کے دین کے متعلق چالیس حدیثیں حفظ کیں، اس کو اﷲ تعالٰی فقیہ اٹھائے گا
(بیھقی)

دو حریص آسودہ نہیں ہوتے ایک علم کا حریص کہ علم سے کبھی اس کا پیٹ نہیں بھرے گا اور ایک دنیا کا لالچی کہ یہ کبھی آسودہ نہیں ہوگا
(بیھقی)

جس علم سے نفع حاصل نہ کیا جائے وہ اس خزانہ کی مثل ہے جس میں سے راہِ خدا میں خرچ نہیں کیا جاتا
(مسند احمد)

قیامت کے دن اﷲ کے نزدیک سب سے بُرا مرتبہ اس عالم کا ہے، جو علم سے مُنْتَفِع نہ ہو.
(دارمی)

علما کی سیاہی شہید کے خون سے تولی جائے گی اور اس پر غالب ہوجائے گی
(تاریخ بغداد)

علما کی مثال یہ ہے جیسے آسمان میں ستارے جن سے خشکی اور سمندر کی تاریکیوں میں راستہ کا پتا چلتا ہے اور اگر ستارے مٹ جائیں تو راستہ چلنے والے بھٹک جائیں گے
(مسند احمد)

خدا کے نزدیک بہت مبغوض  علماء وہ ہیں جو امراء کی ملاقات کو جاتے ہیں
(ابن ماجہ)

جس نے تمام فکروں کو ایک فکر آخرت کی فکر کردیا، اﷲ تعالیٰ فکرِ دنیا سے اس کی کفایت فرمائے گا
(ابن ماجہ)

#علم #تعلیم #علماء #ایجوکیشن #شعور

طالب دعا:
#احسان_اللہ کیانی

0 تبصرے:

Post a Comment

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


Translate in your Language

LinkWithin

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں