تازہ ترین
کام جاری ہے...
Tuesday, May 9, 2017

الحاد اور انسانیت حصہ ھشتم

May 09, 2017

الحاد اور انسانیت       (حصہ ہشتم)

'مزھب نہیں انسانیت'
'مزھب سے پہلے انسانیت'
'میرا مزھب انسانیت ہے'

یہ ڈائیلاگ اکثر ایسے 'گلہ بان' قسم کے اور زندگی سےبیزار لوگ بولتے نظر آئیں گے جو 'انسانیت' کے معنیٰ اور مفہوم سے بھی نا آشنا ہوں گے اور 'دین' کے مقصد اور ضرورت سے بھی ناواقف ہوں گے۔

ایسے لوگ گورا بننے اور ٹائی سوٹ پہن کر انسان لگنے کی ناکام کوشش کرتے نظر آئیں گے۔ بلا ضرورت انگلش کے الفاظ کا استعمال اور سائنس کی ٹرمز کا کثرت سے استعمال کر کے اپنی احساس کمتری کو چھپانے کی بھی کوشش کرتے نظر آئیں گے۔

ایسے لوگ غریب رشتہ دار اور ان پڑ باپ کو پہچاننے سے انکار کر رہے ہوتے ہیں مگر اگلے چوک پر کسی اپاہج کو پانی کی بوتل پیش کر کے 'محسن انسانیت' کا ٹائٹل اپنے نام کر رہے ہوتے ہیں۔اپنے والدین کو 'اولڈ پیپل ہاوس' پھینک کر والدین کی عظمت پر لکھے مضموں پر 'خوب'کمال تحریر' واہ واہ' بٹور رہے ہوتے ہیں۔

اپنی ماں بہنوں اور معاشرے کی عورتوں کو جانوروں کی طرح ننگا دیکھنا چاہتے ہیں لیکن انسانوں کی عظمت، وقار اور حیاء پر لیکچر بھی دے رہے ہوتے ہیں۔

جانوروں جیسی بے مقصد، بے ترتیب اور اصول و قانون سے بے بہرہ زندگی کا گزارنا اور جنگل کا قانون چاہتے ہیں مگر انسانیت انسانیت کا نعرہ بھی لگاتے ہیں۔

غریب رشتہ داروں اور دوستوں سے بات کرنا مناسب نہیں سمجھتے مگر کسی باغیرت مزور اور غریب کی سلفیاں لے لے کر اسکی غربت کا مزاق بنا رہے ہوتے ہیں۔

اگر یہ انسانیت ہے اور ایسی صفات والے 'انسان' ہوتے ہیں تو میں ایسی 'تیسری مخلوق' نما اور کوکونٹ 'انسانیت' اور 'انسان'کو نہیں مانتا۔
ایسی انسانیت سے تو حیوانیت بھی پناہ مانگتی ہو گی۔

0 تبصرے:

Post a Comment

اس کے متعلق آپکی کیا رائے ہے ۔۔؟؟
کمنٹ بوکس میں لکھ دیں ،تاکہ دیگر لوگ بھی اسے پڑھ سکیں

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں