نوجوان بھت کچھ کر سکتے ھیں

کیا ہم نوجوان ایک ہوسکتے ہیں؟
     معاشرے میں غربت اور بےکسی کا دور دورہ ہے۔ کسی کو دو وقت کا کھانا میسر نہیں اور کوئی پہننے کے لیے لباس سے محروم ہے، کوئی غربت کیساتھ قرضوں اور بیماریوں میں ڈوبا ہوا ہے تو کوئی اولاد کثیر کی وجہ سے خودکشی پر مجبور ہے۔
جبکہ دوسری جانب ہمارے امراء عیاشیوں میں ڈوبے ہوئے ہیں، نوجوان نسل جسکے اندر پیار محبت، ایثار و قربانی کا جذبہ ہونا چاہیے تھا وہ مادیت کے پیچھے پڑی ہے۔ اس نے دنیا کو ہی سب کچھ سمجھ لیا ہے۔ نوجوان لڑکے اور لڑکیاں  نام نہاد فیشن اور سٹیتس کو کے نام پر لاکھوں روپے اڑا رہے ہیں۔
     میری دلی خواہش ہے کہ نوجوان فلاحی کاموں کی طرف آئیں اور آگے بڑھ کر غریبوں، یتیموں مسکینوں کا ہاتھ تھام لیں۔ وہ نوجوان جو شادیوں پر آتشبازی کے نام پر لاکھوں ضائع کر دیتے ہیں اس پیسے کو بچا کسی غریب کا گھر بسا سکتے ہیں، کسی غریب کے گھر کا چولہا جلا سکتے ہیں۔ وہ نوجوان لڑکیاں جو میک اپ اور فیشن پر لاکھوں خرچ کرتی ہیں وہ سادگی اپناکر اسی پیسے سے کسی غریب لڑکی کی پڑھائی میں مدد فراہم کرسکتی ہیں، کسی غریب و یتیم کا علاج کرا سکتی ہیں۔
لڑکے لڑکیاں  صرف جنس مخالف کو متاثر کرنے کے لیے فیشن کا سہارا لیتے ہیں، انکو اتنا کہنا چاہتا ہوں کہ آپ کے نصیب میں جو لڑکا یا لڑکی لکھ دی گئی ہے وہ آپکو مل کر رہیگی اس لیے خود کو بےحیائی اور فیشن سے بچائیں اور عیاشیانہ طرز زندگی سے بچیں۔
      آپ نوجوان نہ صرف خود غریبوں کی مدد کرسکتے ہیں بلکہ اپنے والدین اور صاحب ثروت لوگوں کو بھی ایسے کاموں کے لیے قائل کرسکتے ہیں۔ یاد رکھئے جوانی میں نیکی کا ثواب بڑھاپے میں نیکی کرنے سے افضل ہے۔ زندگی تیزی سے گزر رہی ہے اسکی قدر کیجیے اور آخرت کے لیے جتنی ممکن ہو سرمایہ کاری کرلیں تاکہ یوم آخرت پر آپکو بہترین اجر ملے۔۔۔۔۔۔۔۔۔
   اپنے اردگرد غریبوں و یتیموں کو دیکھ کر دل بہت پریشان ہوتا ہے، ایسا احساس ہوتا ہے کہ انکی ذمہ داری ہم پر ہے لیکن ہم اپنی ذمہ داری ادا کرنے سے قاصر ہیں۔ بےشک ہمیں رزق غرباء کی وجہ سے ملتا ہے اور ہم لوگ انکا حق کھاکر کوٹھیاں اور محل بنالیتے ہیں

ذرا سوچئیے اپنے اردگرد کے لوگوں کے بارے میں۔ اپنے لیے جینا بہت آسان ہے مزہ تو تب ہے جب دوسروں کے لیے جیا جائے۔ یقین کیجیے جب کسی کی مدد کرینگے تو آپکو وہ خوشی اور سکون ملے گا جو آپ کو ریشمی بستر پر بھی نہیں سکتا۔
۔
سیروسیاحت کی بجائے ایسے کام کریں جس سے انسانیت کی بھلائی ہو، جس سے آپکو دعائیں ملیں۔
اللہ ہم سب کو نیک اعمال کرنیکی توفیق عطا فرمائے بےشک انسان خطا کا پتلاء ہے