تازہ ترین
کام جاری ہے...
Tuesday, May 9, 2017

مشال خان کے قتل کے بعد ملحدین کا طریقہ واردات

May 09, 2017

ملحدوں کی منتیں !!!

تحریر:  سالار اشعر

🌽🌽🌽

جب سے مشال خان واصل جہنم ہوا ہے، ملحدوں نے نت نئے اسلامی ناموں کی آئیڈیاں بنا کے مسلمانوں کی منتیں کچھ اس طرح شروع کی ہوئی ہیں کہ:

1) اسلام تو امن کا مذہب ہے۔ وہ کسی کو قتل کرنے کی اجازت نہیں دیتا۔
2) مشال خان بے قصور تھا۔ اس نے کوئی گستاخی نہیں کی تھی۔ اور یہ بات کی اس پوسٹ پہ جا رہی ہوگی جہاں مشال خان کی سو گستاخیوں کے ثبوت لگے ہوں گے۔ مگر مجال ہے جو پوسٹ پہ ایک لفظ بھی بول جائیں۔ ایک ہی رٹ ہوگی کہ یہ سب جھوٹ ہے۔ کیسے؟ پتا نہیں۔
3) نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے تو اپنے بدترین دشمنوں کو بھی معاف کیا۔ گستاخ کی سزا موت ہے ہی نہیں۔
4) پھر جب ثابت کر دیا جائے کہ گستاخ کی سزا موت ہے تو کہا جائے گا کہ یہ ریاست کا کام ہے۔
5) جب کوئی منت نہیں چلے گی تو جواب آئے گا کہ تم جیسے لوگ ہی اسلام کو بدنام کر رہے ہیں۔

تم جتنے مرضی اسلامی چولے پہن لو۔ اپنی اسی ایک بات سے پہچانے جاتے ہو کافرو کہ انبیاء کی توہین دیکھ کر بھی تم ہوش میں رہنے کی بات کرتے ہو؟ کوئی مسلمان سب کچھ برداشت کرسکتا ہے، لیکن کسی مقدس ہستی کی شان میں گستاخی نہیں۔ جتنی مرضی منتیں کرلو اسلامی نام رکھ کے۔ گستاخ جہاں ملے گا، جہنم میں جائے گا۔ اگر کچھ تھوڑا بہت ہوش باقی رہا کسی مسلمان کو تو قانون کے ذریعے۔ اور اگر نہ رہا تو جس طرح سلمان تاثیر اور مشال وغیرہ گئے۔

گستاخ نبی کی ایک سزا۔۔۔ سر تن سے جدا ہمارا نعرہ ہے اور مرتے دم تک رہے گا۔ جتنی منتیں کرنی ہیں کرلو۔
**

0 تبصرے:

Post a Comment

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


Translate in your Language

LinkWithin

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...
 
فوٹر کھولیں‌/بند کریں