Wednesday, June 15, 2016

حوض کے متعلق ایک مشکل سوال



مسئلہ ۳۸: مسئولہ حافظ محمد قاسم صاحب ازعدن کیمپ محلہ مسکین باڑہ۷ ربیع الاول ۱۳۳۲ھ
کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیانِ شرع متین اس مسئلہ میں کہ ایک حوض ہے جو بعض لوگوں کے چھ قبضہ یعنی چوبیس۲۴ انگلیوں سے دہ در دہ سے چھیالیس۴۶ انگل زیادہ ہے اور یہ چوبیس۲۴ انگلیاں سترہ۱۷ انچ کے برابر ہیں اور جن لوگوں کی چوبیس۲۴ انگلیاں ساڑھے سترہ۲/۱ -۱۷ انچ ہیں اُس سے دہ در دہ سے چوبیس۲۴ انگلیاں زیادہ ہیں اور جن لوگوں کی چوبیس۲۴ انگلیاں اٹھارہ۱۸ انچ کی برابر ہیں اُس سے دہ در دہ بارہ انگل کم ہے اور اس کے بیچ میں ایک ستون ہے جس کا طول وعرض ایک ایک فٹ ہے کیاایسے حوض میں سے وضو کرنا جائز ہے یا نہیں اور نجاست پڑنے سے اس کا پانی نجس ہوگا یا نہیں؟ تمام کتابوں کے حوالہ سے جواب دیا جائے اور علماء کے مُہر ودستخط بھی ہونا چاہئیں اس کے بارہ میں یہاں سخت فساد ہے اکثر لوگ اس سے وضو کرنا جائز نہیں سمجھتے جو لوگ اس سے انکار کرتے ہیں ان کا شرعاً کیا حکم ہے اس مسئلہ کا جواب باعتبار مذہب حنفی ہونا چاہئے، حوض کی شکل عہ۱ یہ ہے:

       


حوض کی شکل :؎
گہرائی حوض کی ۳ فٹ ۶ انچ۔
الجواب
ذواربعۃ(عہ۲ )الاضلاع ا ب ج د میں قطر ا ج وصل کیا تو مثلث ا د ج میں حسب بیان سائل ضلع ا د ۱۸۹ انچ ہے اور ضلعء ج ۱۶۶ مسطح ۳۱۳۷۴ اور مثلث۱ب ج میں ضلع اب ۱۵۹ ہے اور ضلع ب ج ۱۹۸ مسطح ۳۱۴۸۲ مجموع ۶۲۸۵۶جن کا نصف ۳۱۴۲۸ یہ اس حوض کی مساحت تقریبی ہوئی اور دہ در دہ کیلئے ۳۲۴۰۰ انچ درکا رہیں تو یہ ۹۷۲ انچ کم ہوا، لہٰذا (عہ۱ )مائے قلیل ہے ایک قطرہ نجاست سے سب ناپاک ہوجائیگا،رہا اس میں وضو کرنا اگر ہاتھ یا پاؤں کوئی عضو بے دُھلا اس میں نہ ڈالا جائے تو وضو جائز ہے اگرچہ غسالہ اس میں گرے جب تک مائے مستعمل اس کے پانی پر غالب نہ ہوجائے ھو الصحیح مگر بے دُھلا کوئی عضو اگرچہ ایک پورا یا ناخن بلا ضرورت اس سے مس کرے گا تو سارا پانی قابلِ وضو نہ رہے گا بناء علی الفرق بین الملاقی والملقی کماحققناہ فی رسالتنا النمیقۃ الانقی واللّٰہ تعالٰی اعلم (ملاقی اورملقی میں فرق کی تحقیق اپنے رسالہ النمیقۃ الانقی میں کی ہے واللہ تعالٰی اعلم۔ ت)

 (عہ۱ )جس میں زاویہ د قائمہ ہے ۱۲ (م)
(عہ۲ ) آسانی عمل وقلت تفاوت کے سبب یہ تقریب کی گئی اور تحقیق یہ ہے کہ مثلث ادح جبکہ قائم الزاویہ ہے اس کی مساحت وہی ۳۱۳۷۴ کی نصف ۱۵۶۸۷ انچ ہوئی، رہا مثلث ا ب ح اولاً مقدار قطر اح معلوم کی یوں کہ دح ۱۶۶ کا مربع ۲۷۵۵۶ ہے اور اع ۱۸۹ کا مربع ۳۵۷۲۱ مجموعہ ۶۳۲۷۷، لوگارثم ۸۰۱۲۴۵۹ ع ۴ نصف ۴۰۰۶۲۳۰ء ۲ یہ لوگارثم قطر ہواعدد ۵۴۹ء ۰۲۵۱ انچ یہ قدر قطر ہوئی لاجرم مثلث میں زاویہ احادہ ہے

       


اج پر ب سے عمود ب ھ اتارا، پس بحکم شکل ۱۳مقالہ دوم اقلیدس مربع ب ح چھوٹاہے مجموع مربعین ا ب ا ح سے بقدردوچند مسطح ا ح ا ھ د ا ب ۱۵۹ کا مربع ۲۵۲۸۱+ مربع اح ۶۳۲۷۷ = ۸۸۵۵۸ جس میں سے ب ح ۱۹۸ کامربع ۳۹۲۰۴ کم کیا باقی ۴۹۳۵۴ نصف ۲۴۶۷۷ یہ اح اھ کا مسطح ہے اس کے لوگارثم ۳۹۲۲۹۲۴ ء۴ سے لوقطر ۴۰۰۶۲۳۰ء۲ کم کیاباقی لو اھ ۹۹۱۶۶۹۴ء ا عدد ۱۰۰۱ء ۹۸ یہ مقدار اھ ہوئی اس کے مربع ۶۲۹۳ ء ۹۶۲۳ کو مربع وتر قائمہ اب ۲۵۲۸۱سے تفریق کیاباقی ۳۷۰۴ ء ۱۵۶۵۷ یہ مربع عمود ہوا اس کا لوگارثم ۱۹۴۷۱۸۸ء۴ نصف ۹۷۳۵۹۴ء۲ لوعمود ہے اسے قاعدہ یعنی قطر ۱ ح کے لوگارثم مذکور میں جمع کیا۴۹۷۹۸۲۴ہوااس سے ۱۸۱۰۳۰۰ء۰ کم کیا کہ مساحت مثلث نصف مسطح عمود وقاعدہ ہے باقی ۱۹۶۹۵۲۴ء۴عدد ۱۰۵ء ۱۵۷۳۸ انچ مساحت مثلث ا ب ح ہوئی اسے مساحت مثلث اول میں جمع کرنے سے مساحت حوض ۳۱۴۲۵ انچ ہوئی حساب تقریبی سے صرف تین انچ کم توحوض دہ در دہ سے ۵ ۹۷ انچ کم ہے جن کے تیرہ سو انگل ہوئے نہ صرف بارہ جو سوال میں ہے۔
فائدہ:حوض کازاویہ ح حادہ سے اس لئے کہ مثلثۃ ب ھ ح قائم الزاویہ ہیں ب ح: ع :: ب ھ:جیب ب ح ھ:۔ لوعمود ۰۹۷۳۵۹۴ء۲*لوب ح ۲۹۶۶۶۵۱۱ء۲= ۶۹۴۲ ۸۰۰ء۹ کہ لوجیب ۳۴ء۳۹۱۱۴۳ہے اور مثلث ا د ح قائم الزاویہ ہیں ا ح:ع::ا د:جیب ا ح د ÷ لواء ۲۷۶۴۶۱۸، ۲لوقطر ۴۰۰۶۲۳۰ ء۲=۸۷۵۸۳۸۸ء۹ کہ لوجیب ۹۴ء ۴۸۴۲۲۴ ہے مجموع زاویتین ۴۸ء۵۰۷۵۴۸ مقدار زاویہ ح ہے اور اگر یہ بھی قائمہ ہوتا تو امر آسان تر تھا ب ح پر اسے عمود ا ھ نکالا کہ بحکم موازات جء کے برابر ہوا اور ھ ح ::اع تو مستطیل ھ ع ۱۸۹*۱۶۶=۳۱۳۷۴ اور مثلث ب ھ ا قائم الزاویہ ہیں ب ھ = ۱۹۸- ۱۸۹ مجموعہ مثلث ومستطیل ۳۲۱۲۱ مگر یہ حسب بیان سائل محال ہے کہ ا ب کو ح ء سے اقصر بتایا ہے تو ضرور ہے کہ ب ح موازی ا ع نہ ہو واللہ تعالٰی اعلم ۱۲ منہ (م)
عہ۱ گز شرعی کہ چوبیس انگل ہے ایک ہاتھ یا ڈیڑھ فٹ ہے جس کے ۱۸ انچ ہوئے اور اس ذراع سے خود سوال میں دہ در دہ سے کم ہونا مذکور مگر وہ نہایت مختل وناصواب تھا لہٰذا ازسرِنو محاسبہ کیا ۱۲ (م)



فتاوی رضویہ ،مسئلہ نمبر 38
مفتی :امام احمد رضا خان بریلوی

       




 

No comments:

Post a Comment

Join us on

Must click on Like Button

Related Posts Plugin for WordPress, Blogger...